Untold Storiess
How to Write

How to Write? | کیسے لکھا جائے؟

1+
Distancing From Islam

How to Write?

کیسے لکھا جائے؟

How to write | Urdu Article | By Anees Ur Rehman   پچھلے کچھ عرصے کے دوران یہ سوال مجھ سے اکثر پوچھے جاتے رہے ہیں کہ ”ہم کیسے لکھ سکتے ہیں؟ لکھتے کیسے ہیں؟ لکھنے کے لئے کیا چیزیں ضروری ہیں؟ آپ کیسے لکھتے ہیں؟ یا ہم لکھنا چاہتے ہیں پر لکھا نہیں جاتا اِس کا کیا حل ہے؟ وغیرہ وغیرہ۔“تو میں ہمیشہ ایک بات کہتا ہوں کہ لکھنا کوئی مشکل کام نہیں۔ جس شخص نے چار جماعتیں پڑھی ہیں وہ لکھ سکتا ہے۔

اصل بات یہ ہوتی ہے کہ کیا لکھنا اور کیا چھوڑنا ہے، آپ کی لکھی بات کتنی پائیدار ہے اور اُس میں کتنا وزن ہے۔مگر افسوس صد افسوس کہ سوشل میڈیا ایک طرف تو لوگوں تک اپنی بات پہنچانے کا ایک آسان اور بہترین ذریعہ ہے تو دوسری جانب شہرت کی بھوک نے مضمون نگاری جیسے ادبی اور تخلیقی کام کو انتہائی حقیر، بے توقیر و بے وقعت بنا دیا ہے۔

آج جو لوگ چار لفظ لکھ سکتے ہیں وہ خود کو ادیب، لکھاری،

مضمون نویس، نثر نگار، شاعر، بلاگرز، دانشور، اینفلوئنسرز اور پتا نہیں کیا کیا سمجھنے لگتے ہیں۔ جبکہ حقیقت یہ ہے کہ اُن کی باتیں بہت سطحی اور اتنی ہی پائیدار ہوتی ہیں جتنی کہ سمندر کی جھاگ۔ پھر اوپر سے بدقسمتی کہ آپ اُنہیں سمجھا نہیں سکتے کیوں کہ فالوورز، لائکس اور کمنٹس کی تعداد سوچنے سمجھنے کی صلاحیت کو مفلوج کر دیتی ہے۔ اوپر سے لوگوں کی سوچ کا معیار یعنی کہ

”خوب جمے گی جب مل دیکھیں گے جاہل دو“ پہلے گنتی کے چند لوگ لکھا کرتے تھے تو ادب کا کیا اعلی معیار تھا، آج ہر بندہ لکھاری ہے اور ادب کا بیڑا غرق ہوگیا ہے۔ہمارا المیہ ہے کہ ہم ہر غیر ضروری کام بہت شوق سے سیکھتے ہیں، مگر جو سیکھنے کا کام ہوتا ہے وہاں ہر کوئی استاد ہوتا ہے۔

How to write? | کیسے لکھا جائے؟, how to write in urdu, what to write and when to write, Todaypk, daily Pakistan, today.pk, dailypakistan, bbc urdu Pakistan, e sahulat, today pk, jang.com.pk, jang breaking news, daily jang latest news,

dawn news urdu, daily express urdu, urdu news paper, the news urdu, articles, qaumi akhbar, urdu columns, pak urdu news, daily express (urdu newspaper), jang akhbar, daily express urdu newspaper, hamid mir column, express urdu newspaper, urdu writing online, pak news urdu, daily urdu columns, urdu news point,

How to write? | کیسے لکھا جائے؟

اب اگر آپ لکھتے ہیں یا لکھنا چاہتے ہیں اور بہت عمدہ لکھنا چاہتے ہیں تو درج ذیل باتوں کو اپنے پلو سے باندھ لیں۔

1 :   آپ جو لکھنے جارہے ہیں اُس بارے میں آپ کی اپنی سوچ اور مقصد پختہ اور بلکل واضح ہونی چاہئے۔ آپ کی سوچ میں کسی بھی قسم کے شکوک و شبہات نہیں ہونے چاہئے۔ اگر ہیں تو پہلے اُنہیں ختم کریں۔

2:   اُس چیز یا موضوع سے متعلق آپ کو دوسری طرف کا بیانیہ بہت اچھے سے معلوم ہونا چاہئے۔

3 :   آپ کو یہ بھی معلوم ہونا چاہئے کہ آپ کا موضوع مزید کن کن موضوعات سے منسلک ہے تاکہ آپ کی بات زیادہ موضوعات پر لاگو ہو اور کہیں کسی جگہ پر تضاد یا آپ کی اپنی بات کا رد موجود نہ ہو۔

4 : لکھنے سے پہلے پڑھنا چاہئے اور پڑھنے کے بعد آپ کو سوچنا چاہئے۔ جس قدر زیادہ ممکن ہو آپ سوچیں۔ میں اگر اپنی بات کروں تو شاید میں اِتنا پڑھتا نہیں کہ جتنا مجھے پڑھنا چاہئے، مگر میں مشاہدہ کرنے اور سوچنے میں اتنا وقت لگاتا ہوں کہ آپ کی سوچ ہے۔ مارک ٹاون کا ایک بہت مشہور قول ہے کہ 

“Truth is stranger than fiction. but it is because Fiction is obliged to stick to possibilities; Truth isn’t”

یہ ایک جملہ میں نے اٹھارہ گھنٹے کی محنت کے بعد سیکھا اور پھر اِس پر مزید چھ گھنٹے سوچا۔ یہ اتنا گہرا، وسیع اور دلچسپ جملہ ہے کہ مزہ آجاتا ہے اِس پر غور کر کے۔ انشاءللہ کبھی موقع ملا تو صرف اِس جملے پر بھی ایک تحریر لکھوں گا کہ اِس ایک جملے نے مجھے کیسے گھمایا۔

5 : صرف اپنا مدعا بیان کرنے کے لئے کبھی نہ لکھیں۔ اگر لکھیں بھی تو اتنے مضبوط دلائل اور واضح الفاظ کے ساتھ لکھیں کہ آپ کی بات کو رد کرنے کے لئے بھی کسی کو خوب محنت کرنی پڑے اور اِس کے لئے پہلے آپ کو محنت کرنی پڑے گی۔

6 :   کبھی بھی کسی موضوع کی بنیاد اپنے محدود تجربے پر نہ رکھیں۔ ہاں آپ یہ کہہ سکتے ہیں کہ میں نے فلاں واقعے سے یہ بات سیکھی یا اُس کا مجھ پر یہ اثر ہوا۔ لیکن اِن واقعات سے حاصل ہونے والے سبق یا اثرکو تب تک اصول، قانون یا فارمولا نہ سمجھیں جب تک کہ آپ کو یقین نہ ہو کہ اِس فارمولے کا کوئی توڑ نہیں۔ ایسا یقین ہونے کے باوجود بھی آپ کو ذہنی طور پر تیار رہنا چاہئے کہ آپ کی بات غلط ثابت ہوسکتی ہے۔ اگر آپ ایسا نہیں کرتے تو پھر جہالت آپ کا مقدر ہے۔

7 :  کبھی بھی ٹرینڈ کو دیکھتے ہوئے نہ لکھیں۔ اگر آپ کے پاس مواد ہے، آپ کی سوچ واضح ہے اور آپ سمجھتے ہیں کہ آپ لکھ سکتے ہیں تو بہت اچھی بات ہے ٹرینڈنگ موضوع پر لکھنا چاہئے۔ لیکن اگر ایسا نہیں ہے، تو پھر بلاوجہ کی زحمت کرنے کی ضرورت نہیں آپ کو۔

8۔ :     مخلص اساتذہ کی رہنمائی لیں۔ استاد بننے سے پہلے شاگرد بننا پڑتا ہے۔ جو شاگرد نہیں بنتا وہ استاد بھی نہیں بن سکتا۔ ہمیشہ اصلاح حاصل کرنے اور بہتر سے بہتر لکھنے کی جستجو میں رہیں۔

9 :    آپ میں ہمت اور حوصلہ ہونا چاہئے، جیسے تعریف کو پسند کرتے ہیں ویسے ہی تنقید کو بھی برداشت کرنا چاہئے۔ آپ کو اپنی تحریر پر اٹھنے والے ہر  جائزسوال کا جواب دینا چاہئے اگر آپ اپنے کام اور تحریر کے ساتھ مخلص ہیں۔

یہ سب بنیادی باتیں ہیں۔ اِن کے بغیر گزارہ ممکن نہیں۔ باقی بات رہی زبان کے انتخاب کی، الفاظ کے چناؤ کی، تحریر کی صنف کی تو یہ سب آپ کی اپنی مرضی، پسند اور آسانی پر منحصر ہے، جتنا گڑ ڈالیں گے اتنا میٹھا ہوگا۔ لیکن ہاں جو بھی صنف یا زبان منتخب کریں تو اُس کے اصولوں کا خیال رکھنا لازمی ہے اور یہ اخلاص کا تقاضا ہے۔ مثال کے طور پر کوئی شخص شاعری کی صنف کا انتخاب کرتا ہے لیکن  شاعری کی ابجد سے بھی ناواقف ہے اور سیکھنے کی کوشش کرنا بھی اپنی توہین سمجھتا ہے، مگر اپنے جیسے جاہلوں کی واہ واہ پر خود کو غالبِ ثانی یا بیگم لکھنوی کی نسل سے سمجھے تو ایسے لوگ صرف فنکار اور شعبدہ باز ہوتے ہیں۔ لکھاری تو بہت خودار ہوتا ہے لیکن یہ لوگ داد، شہرت اور دولت کے لئے ننگے ہونے کو بھی تیار رہتے ہیں۔

آخر میں میری تمام لکھنے والوں سے مودبانہ گزارش ہے کہ اپنے اندر اخلاص پیدا کریں۔ اگر آپ کو واقعی لکھنے کا شوق ہے تو پھر اِس فن کی بنیادی چیزوں کو ازبر کر لیں۔ دوسروں کی نقل نہ کریں بلکہ اپنا منفرد انداز تخلیق کریں۔ اپنی تحریروں میں مختلف اسلوب اپنائیں جیسا کہ مکالمہ، کہانی، روداد، مراسلہ اورمکتوب نگاری وغیرہ۔ جلدبازی سے گریز کریں۔ آپ ہفتے میں بھلے ایک مضمون لکھیں لیکن وہ ایسا جاندار ہو کہ دوسروں کو دس مضامین پر بھاری پڑے۔اِن تمام باتوں کے ساتھ سب سے اہم بات کہ لکھاری بننے کا صرف ایک ہی اصول ہے اور وہ ہے

”وسیع مطالعہ اور گہری سوچ“۔

الله ہماری سوچ میں وسعت اور قلم میں برکت دے۔ آمین۔

How to write? | کیسے لکھا جائے؟
Urdu Article By
How to write
Anees Ur Rehman
Writer

How to write? | کیسے لکھا جائے؟

More from
Miscellaneous

Click the tabs blow to cheek the latest articles in the same catagory

The Stories Within
Challenges Faced By Education Sector in Pakistan-Part 2 | پاکستان کے تعلیمی مسائل
28Oct

Challenges Faced By Education Sector in Pakistan-Part 2 | پاکستان کے تعلیمی مسائل

0 Challenges Faced By Education Sector In Pakistan-Part 2 پاکستان کے تعلیمی مسائل Challenges Faced By Education Sector In Pakistan-Part 2 | پاکستان کے تعلیمی مسائل | Urdu Article |

Challenges Faced By Education Sector in Pakistan-Part 1 | پاکستان کے تعلیمی مسائل
25Oct

Challenges Faced By Education Sector in Pakistan-Part 1 | پاکستان کے تعلیمی مسائل

0 Challenges Faced By Education Sector In Pakistan-Part 1 پاکستان کے تعلیمی مسائل Challenges Faced By Education Sector In Pakistan-Part 1 | پاکستان کے تعلیمی مسائل | Urdu Article |

The Tsunami of Inflation | مہنگائی کا سونامی
20Oct

The Tsunami of Inflation | مہنگائی کا سونامی

0 The Tsunami Of Inflation مہنگائی کا سونامی The Tsunami Of Inflation | مہنگائی کا سونامی | Urdu Article | By Naeem Ud Din Farooqi | پاکستان میں ہر سیاسی

Independence Day of Pakistan 2020 | یوم تشکر
14Aug

Independence Day of Pakistan 2020 | یوم تشکر

3+ Independence Day of Pakistan 2020 یوم تشکر Independence Day of Pakistan 2020 | By Ayesha Siddiqui |  پھر ولولہ ہے شور ہے ، جشن آزادی کے اطوار ہی کچھ

Justice in Different Prospects | عدل ملکی حالت کے تناظر میں
04Jul

Justice in Different Prospects | عدل ملکی حالت کے تناظر میں

3+ Justice In Different Prospects عدل ملکی حالت کے تناظر میں Justice In Different Prospects | By M. Junaid Babar  سنا تھا دیواروں کے بھی کان ہوتے ہیں وہ سب

Mafia in Pakistan | آٹا اورچینی کا بحران — ایک تنقیدی جائزہ
20Apr

Mafia in Pakistan | آٹا اورچینی کا بحران — ایک تنقیدی جائزہ

8+ Mafia In Pakistan آٹا اورچینی کا بحران — ایک تنقیدی جائزہ Mafia In Pakistan   ایف آئی اے نے کچھ دن پہلے آٹا اور چینی کی کمی اور زخیرہ اندوزی

How to write? | کیسے لکھا جائے؟

Cheek out the Latest Updates from Untold Storiess:

1+

What are your Thought's ..???